سندھ ہائیکورٹ، 9 یونیورسٹیز میں وائس چانسلرز کی تعیناتی کا عمل جاری رکھنے کا حکم

سندھ کی 9 یونیورسٹیز میں وائس چانسلرز کی تعیناتی کا معاملہ، سندھ ہائی کورٹ سکھر بنچ نے محفوظ فیصلہ سنادیا، ‎پروفیسر کی جانب سے دائر کردہ پٹیشن کو عدالت نے مسترد کرکے وائس چانسلرز کی تعیناتی کا عمل جاری رکھنے کا حکم دے دیا ہے،مدعی پروفیسر غلام قادر شر نے وائس چانسلرز کی تقرری کیلئے شائع ہائر ایجوکیشن کمیشن کے اشتہارات کو بنیاد بنا کر چیلنج کیا تھا، درخواست گزار کے وکیل شبیر شر نے بتایا کہ ہائر ایجوکیشن کمیشن نے حکومتی ایماء پر رولز میں تبدیلی کرکے من پسند بیوروکریٹس کی تقرری چاہتی ہے،ہائر ایجوکیشن کمیشن نے اپنے اشتہار میں عمر کی حد بھی 65 سال سے کم کرکے 62 سال کردی ہے، سرکاری وکیل علی رضا بلوچ نے بتایا کہ عارضی چارج پر تعینات وائس چانسلرز اپنی پوسٹنگز بچانے کیلئے اسٹے آرڈر چاہتے ہیں، عمر کم کرنے کے حوالے سے تمام صوبوں میں قوانین تبدیل کئے گئے ہیں، صرف سندھ میں نہیں، ہائر ایجوکیشن کمیشن نے دیگر قوانین میں کوئی تبدیلی نہیں کی، قوانین تمام صوبوں میں یکساں ہیں، اشتہار کے مطابق ہائر ایجوکیشن کمیشن نے امیدوار کی کم از کم تعلیم پی ایچ ڈی کے علاوہ پندرہ سال کا تجربہ بھی مانگا ہے۔ عدالت نے دلائل کے بعد گزشتہ روز فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *